Khwab KI Tabeer

Khawab Main Shehar Dekhna

Khawab Main Shehar Dekhna

خواب میں شھر دیکھنا

Khawab Main Shehar Dekhna Find Dream meaning of Khawab Main Shehar Dekhna and other dreams in Urdu. Dream Interpretation & Meaning in Urdu. Read answers by islamic scholars and Muslim mufti. Answers taken by Hadees Sharif as well. Read Khawab Main Shehar Dekhna meaning according to Khwab Nama and Islamic Dreams Dictionary.

حضرت ابن سیرین رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر دیکھے کہ کسی شہر میں گیا ہے ۔ دلیل ہے کہ اس کا دین قوی ہو گا ۔ اور دین کا کام پورا ہو گا اور اپنی مراد کو پہنچے گا ۔ اور اگر دیکھے کہ شہر سے باہر آیا ہے ۔ یا اس کو کسی نے شہر سے نکالا ہے ۔
اس کی تاویل اول کے خلاف ہے ۔ اگر کوئی اپنے آپ کو کنگرے پر یا شہر پر دیکھے تو اس کی ہلاکت پر دلیل ہے ۔ اور اگر دیکھے کہ اس کو ایک شہر سے دوسرے شہر میں نکالا ہے ۔ دلیل ہے کہ عورت کو طلاق دے گا اور اس کی عورت دوسرا شوہر کرے گا ۔
اور اگر دیکھے کہ کسی شہر میں مقیم ہوا ہے ۔ دلیل ہے کہ اس کی عورت اس سے جدا ہو گی ۔ اور اگر دیکھے کہ مسلمانوں کے شہر سے کا فروں کے شہر میں گیا ہے ۔ دلیل ہے کہ سچے دین سے جھوٹے دین کی طرف مائل ہو گا ۔ اور ممکن ہے کہ کافر عورت سے شادی کرے گا ۔
اور اگر گرم ملک کے شہر میں برف اور سردی دیکھے تو قحط اور تنگی پر دلیل ہے ۔ اور اگر کسی سرد ملک کے کسی شہر میں یہ دیکھے تو دلیل اس کی فراخی اور ارزانی نمت پہ ہو گی او اگر دیکھے کہ کسی شہر میں گیا ہے اور وہ شہر کو پسند آیا ہے ۔
دلیل ہے کہ عزت اور مرتبہ پائے گا ۔ اور اگر دیکھے کہ گاؤں سے شہر میں گیا ہے ۔ دلیل ہے کہ اسکو خیر ومنفعت حاصل ہو گی ۔ اور اگر دیکھے کہ شہر سے گاؤں کو گیا ہے ۔ دلیل ہے کہ اسکی مراد پوری نہ ہوگی ۔ فرمان حق تعالیٰ ہے ۔ ربنا اخرجنا من ھذہ القریتہ الظالم اھلھا(اے خدا ! ہم کو اس بستی سے نکال کہ جس کے اہل ظالم ہیں) اور اگر دیکھے کہ شہر میں گم ہو گیا ہے ۔
تو اس کی تاویل نیک ہے ۔ اور اگر دیکھے کہ عورتیں کسی شہر میں گئی ہیں ۔ دلیل ہے کہ اس شہر میں فتنہ اور بلا پڑ ے گی ۔ اور اگر دیکھے کہ شہر میں آراستہ عورتیں آئی ہیں۔ دلیل ہے کہ اس ملک میں نعمت اور فراختی ہو گی ۔ اور اگر دیکھے کہ عورتیں شہر کے اندر گئی ہیں۔
دلیل ہے کہ بادشاہ کے غلام وہاں جائیں گے اور ظلم اور بے انصافی کریں گے اور اگر دیکھے کہ عورتیں منہ باندھ کر شہر کے اندر گئی ہیں۔ دلیل ہے کہ اس شہر میں ناخوش باتیں جائیں گی ۔ اور اگر میں کسی شہر کی مشرقی جانب دیکھے ۔ دلیل ہے کہ مغربی جانب سے بہتر ہے ۔
حضرت جابر مغربی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر میں ہندوستان کا شہر دیکھے ۔ دلیل ہے کہ بد ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو بلغار اور شقامان کے شہروں میں دیکھے ۔دلیل ہے کہ اس پر خیانت ہو گی اور اس کے کام پوشیدہ ہو نگے ۔
اور اگر اپنے آپ کو ماور النہر کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ عزت اور مرتبہ اور امن پائے گا۔ اور اگر اپنے آپ کو خوارزم میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کا کام بند ہو گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو عراق کے شہروں میں دیکھے دلیل ہے کہ دوست اور مراد پائے گا۔
اور اگر قاپنے آپ کو خراسان کے شہروں میں دیکھے تو اس کا کام آسانی سے پورا ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو شہر فارش میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کی صحبت پار سا لوگوں سے ہو گی ۔ اور اگر اپنے آپ کو کرمان کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کا بڑا کنبہ ہو گا ۔
اور اگر اپنے آپ کو حجاز کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ حج کرے گا اور اگر اپنے آپ کو یمن کے شہر میں دیکھے تو سلامتی اور امن پر دلیل ہے ۔ اور اگر آپنے آپ کو مصر کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ شاد اور خوش ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو آزر بائی جان کے شہروں میں دیکھے۔
دلیل ہے کہ کاموں میں رنج اور بلا اور تکلیف اٹھائے گا۔ اور اگر اپنے آپ کو آرمینیا کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کی مراد پوری ہو گی ۔ اور اگر اپنے آپ کو مغرب کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کے کام میں نقصان پڑے گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو فرنگ کے شہروں میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کے دنیا کے کام نیک ہوں گے ۔ لیکن اس کا دین ضعیف ہو گا اور اگر اپنے آپ کو شیروان کے شہروں میں دیکھے۔ دلیل ہے کہ اس کا کام نیک ہو گا۔

Khawab Main Shehar Dekhna The Prophet (peace and blessings of Allaah be upon him) said: If you see that a city Khawab Main Shehar Dekhna has gone. It is argued that his religion will be strong. And the work of religion will be fulfilled and will reach its meaning. And if you see that the city has come out. Or has anyone pulled it out of the city?
Khawab Main Shehar Dekhna Her persecution is against the first. If anyone sees himself on a kitchenette or on the Khawab Main Shehar Dekhna city, it is a matter of death. And if you see that he has pulled from one city to another. It is argued that divorce the woman and her second wife will do it.
Khawab Main Shehar Dekhna And if you see that there is a city. It is argued that her woman will be separated from Khawab Main Shehar Dekhna it. And if you see that the city of the city of the angels went to the city. It is argued that Khawab Main Shehar Dekhna the true religion will turn towards false religion. And the infidel may marry a woman.
And if ice and cold are seen in the warm country of the country, it is argued on the dangers and dangers. And if it is seen in a cold country in a city, then the argument will come to its intricate and meaningful view, and if you see that it has gone to a city and has liked the city.
It is argued that the times and the times will be found. And if you see that the village has gone to the city. It is argued that he will receive good acceptance. And if you see that the city has gone to the city. It is argued that it will not be fulfilled. The decree is right. O God, take us out of the town that is unjust and if you see that the city is lost.
So he’s good. And if you see that women have gone to a city. It is argued that this city will be troubled. And if you see the women coming in the city have come. It is believed that there will be blessings and prosperity in this country. And if you see that women have gone inside the city.
It is argued that the slaves of the king will go there and will be oppressed and unjust, and if they see that women have left their mouths and went inside the city. It is argued that there will be unpleasant talks in this city. And if I see a city’s east side. It is argued that the West is better.
Hazrat Jabir has said by the western prophet. If I see the city of India. The argument will be bad. And if you see yourself in the cities of Belgrade and the Belamans, there is a danger that it will be miserable and its work will be hidden.
And if you see yourself in the cities of the city of Al-Nahr. It is argued that honor and time and peace will be found. And if you see yourself in poverty. It is argued that his work will be closed. And if you argue that you see yourself in the cities of Iraq, you will find friends and attitudes.
And if the boy sees you in the Khorasan cities, his work will be easily accomplished. And if you see yourself in the city. It is argued that his companionship will be with the people. And if you see yourself in the cities of Kerman. It is argued that she will be a big family.
And if you see yourself in the cities of Hazaras. It is argued that the pilgrimage will be done, and if you see yourself in the city of Yemen, it is a matter of security and peace. And if you see you in the cities of Egypt. It is argued that will be happy and happy. And if you see yourself in the cities of tiredness.
It is argued that in the tasks we will get rid of it and get hurt and hurt. And if you see yourself in the cities of Armenia. It is argued that it will be fulfilled. And if you see yourself in the western cities. It is argued that his work will be harmful. And if you see yourself in Finger cities. It is argued that the work of his world will be good. But his religion will be weak and if he sees himself in cities of Sharon. It is argued that its work will be good.

Recent Posts:

[display-posts]

اچھا خواب نعمتِ خدا وندی

حضورﷺ نے ارشاد فرمایا ” بشارتوں کے سوا کوئی چیز باقی نہیں رہی ۔ صحابہ نے عرض کیا ےیا رسولاللہ بشارتوں سے کیا مراد ہے آپ نے فرمایا سچا خواب ۔(صحیح بخاری عن ابی ھریرہ) بخاری ومسلم کی متفق علیہ حدیث ہے آنحضرت ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ سچا خواب نبوت کا چھیاسواں حصہ ہے ۔

اس حدیث شریف معلوم ہوا کہ سچا خواب رویائے صالحہ علوم نبوت کا ایک جزو ہے اور علم نبوت باقی ہے گو انبیاءکرام کی آمد کا سلسلہ موقوف ہوچکا دوسرے لفظوں میں سچا خواب علوم نبوی کا عکس ہے۔

خواب کی اقسا م

امام محمد بن سیرین ارشاد فرماتے ہیں کہ خواب تین قسم کے ہوتے ہیں ۔

  • 1- مبشرات خداوندی –

2- تخویفِ شیطان) شیطان کے زیرِ اثر ) –

3- حدیثِ نفس یعنی ذہنی اور دماغی خیلات کا عکس –

اس تقسیم سے ظاہر ہوتا ہے کہ خواب کے تمام اقسام صحیح قابلِ تعبیر اوردر خوراعتناء نہیں ہوتے تعبیر اور اعتبار کے لائق وہی خواب ہوتے ہیں جو حق تعالیٰ کی طرف سے بشارت اور اعلام پر مبنی ہوں۔

علم تعبیر کے چھ مشہور امام

-علم تعبیر میں درج ذیل چھ آئمہ کرام کے اقوال کے بطور سند پیش کیا جاتا ہے

  1. حضرت دانیال علیہ اسلام
  2. حضرت امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ علیہ
  3. حضرت امام محمد بن سرین رحمتہ اللہ علیہ
  4. حضرت امام جابر مغربی رضی اللہ تعالیٰ علیہ
  5. حضرت امام ابراہیم کرمانی علیہ رحمتہ اللہ علیہ
  6. حضرت امام اسمعیل بن شوکت رحمتہ اللہ علیہ

تعبیر بیان کرنے کیلئے ضروری علوم

  1. ۔علم تفسیر
  2. علم ضرب الامثال
  3. علم حدیث
  4. اشعار عرب
  5. علم اشتقاق (صرف)
  6. نوادر
  7. علم الغات
  8. علم الفاظ متد اَولہ

چنانچہ ایسے علماء ہے تعبیر بیان کرنے کے اہل ہیں جو ان علوم کے ماہر اور متقی پرہیزگار ہوں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے